جب بھــی تم کو لہوکی ضـــرورت پـــڑی.........

Published on by KHAWAJA UMER FAROOQ

جب بھــی تم کو لہوکی ضـــرورت پـــڑی
سب سـے ہہـــلےھی گردن ھماری کٹی
پھر بھی کھتےھیں ھم سےیہ اھل چمن
یـــہ چـــمن ھے ھـــمــارا تـــــمـــھارا نہیں


جب ساز سلاسل بجتے تھے ہم اپنے لہو میں سجتے تھے
وہ ریت ابھی تک باقی ہے ۔ یہ رسم ابھی تک جاری ہے

کچھ اہلِ ستم ، کچھ اہلِ حشم مے خانہ گرانے آئے تھے
دہلیز کو چوم کے چھوڑ دیا ۔ ۔ ۔ دیکھا کہ یہ پتھر بھاری ہے

جب پرچمِ جاں لے کر نکلے ہم خاک نشیں مقتل مقتل
اُس وقت سے لے کر آج تلک جلاد پہ ہیبت جاری ہے

 
 

Comment on this post