میرے ہاتھ میں قلم ہے میرے ذہن میں اجالا.......

Published on by KHAWAJA UMER FAROOQ

میرے ہاتھ میں قلم ہے میرے ذہن میں اجالا
مجھے کیا دبا سکے گا کوئی ظلمتوں کا پالا

مجھے فکر امن عالم تجھے اپنی ذات کا غم
میں طلوع ہو رہا ہوں تو غروب ہونے والا

Enhanced by Zemanta

Comment on this post