Overblog Follow this blog
Administration Create my blog

98 posts with urdu poetry

مجھ کو تھکنے نہیں دیتا یہ ضرورت کا پہاڑ........معراج فیض آبادی

مجھ کو تھکنے نہیں دیتا یہ ضرورت کا پہاڑ........معراج فیض آبادی

آج بھی گاؤں میں کچھ کچے مکانوں والےگھر میں ہمسائے کے فاقہ نہیں ہونے دیتے مجھ کو تھکنے نہیں دیتا یہ ضرورت کا پہاڑمیرے بچے مجھے بوڑھا نہیں ہونے دیتے ان اشعار کے خالق مشہور شاعر معراج فیض آبادی صاحب گزشتہ روز لکھنؤ میں انتقال کر گئے۔۔۔ انا للہ و انا الیہ...

Read more

اے چاند یہاں نہ نکلا کر

اے چاند یہاں نہ نکلا کر

اے چاند یہاں نہ نکلا کر بے نام سے سپنے دیکھا کر یہاں اُلٹی گنگا بہتی ہے... اس دیس میں اندھے حاکم ہیں نہ ڈرتے ہیں نہ نادم ہیں نہ لوگوں کے وہ خادم ہیں ہے یہاں پہ کاروبار بہت اس دیس میں گردے بکتے ہیں کچھ لوگ ہیں عالی شان بہت اور کچھ کا مقصد روٹی ہے وہ کہتے...

Read more

تری تلاش میں جاں سے گزرنے والا ہوں

تری تلاش میں جاں سے گزرنے والا ہوں

تری تلاش میں جاں سے گزرنے والا ہوں مجھے سنبھال کسی دم بکھرنے والا ہوں وہ اک سوال کہ جس کا کوئی جواب نہیں اُسی سوال کی تہہ میں اترنے والا ہوں مرا طریقہ ذرا مختلف ہے سورج سے...جہاں پہ ڈوبا وہیں سے ابھرنے والا ہوں جو ہوسکے تو ملاقات مجھ سے کر لینا تمہارے...

Read more

قتل چھپتے تھے کبھی سنگ کی کے بیچ.......محسن

قتل چھپتے تھے کبھی سنگ کی کے بیچ.......محسن

قتل چھپتے تھے کبھی سنگ کی کے بیچ اب تو کھلنے لگے مقتل بھرے بازار کے بیچ اپنی پوشاک کے چھن جانے پہ افسوس نہ کر سر سلامت نہیں رہتے یہاں دستار کے بیچ ... سرخیاں امن کی تلقین میں مصروف رہیں حرف بارود اگلتے رہے اخبار کے بیچ کاش اس خواب کو تعبیر کی مہلت نہ...

Read more

شب و روز کی گردشوں کا تسلسل..........محسن نقوی

شب و روز کی گردشوں کا تسلسل..........محسن نقوی

کئی سال گزرے کئی سال بیتے شب و روز کی گردشوں کا تسلسل دل و جاں میں سانسوں کی پرتیں الٹتے ہوۓ زلزلوں کی طرح ہانپتا ہے ..!... چٹختے ہوۓ خواب آنکھوں کی نازک رگیں چھیلتے ہیں مگر میں ہر اک سال کی گود میں جاگتی صبح کو بے کراں چاہتوں سے اٹی زندگی کی دعا دے کے...

Read more

کچھ کہنے کا وقت نہیں یہ۔۔۔کچھ نہ کہو، خاموش رہو..........انشا جی

کچھ کہنے کا وقت نہیں یہ۔۔۔کچھ نہ کہو، خاموش رہو..........انشا جی

کچھ کہنے کا وقت نہیں یہ۔۔۔کچھ نہ کہو، خاموش رہو اے لوگو خاموش رہو۔۔ ہاں اے لوگو، خاموش رہو...سچ اچھا، پر اس کے جلو میں، زہر کا ہے اک پیالا بھی پاگل ہو؟ کیوں ناحق کو سقراط بنو، خاموش رہو حق اچھا، پر اس کے لئے کوئی اور مرے تو اور اچھا تم بھی کوئی منصور...

Read more

خواہشوں کی نمائش پہ مسکرانے والے

خواہشوں کی نمائش پہ مسکرانے والے

خواہشوں کی نمائش پہ مسکرانے والے خود بھی افسردہ ہیں اج مجھے رولانے والے تیرا غم پالنے میں ڈالے ۔۔۔ برسوں سے دیکھ تھکے نہیں ہاتھ جھولا جھولانے والے... خود سے لڑتے ہوئے مجھے اب ڈر لگتا ہے کون منائے گا اب ، کہاں مجھ کو منانے والے قا صد نے دی خبر میرے مرنے...

Read more

ہم غزل میں ترا چرچا نہیں ہونے دیتے.........معراج فیض آبادی

ہم غزل میں ترا چرچا نہیں ہونے دیتے.........معراج فیض آبادی

ہم غزل میں ترا چرچا نہیں ہونے دیتے تیری یادوں کو بھی رُسوا نہیں ہونے دیتے کچھ تو ہم خود بھی نہیں چاہتے شہرت اپنی اور کچھ لوگ بھی ایسا نہیں ہونے دیتے عظمتیں اپنے چراغوں کی بچانے کے لئے ہم کسی گھر میں اُجالا نہیں ہونے دیتے آج بھی گاؤں میں کچھ کچے مکانوں...

Read more

ابھی ہجر کا قیام ہے اور دسمبر آن پہنچا ہے

ابھی ہجر کا قیام ہے اور دسمبر آن پہنچا ہے

ابھی ہجر کا قیام ہے اور دسمبر آن پہنچا ہے یہ خبر شہر میں عام ہے دسمبر آن پہنچا ہے آنگن میں اُتر آئی ہے مانوس سی خوشبو یادوں کا اژدہام ہے ، دسمبر آن پہنچا ہے خاموشیوں کا راج ہے ،خزاں تاک میں ہے اداسی بھی بہت عام ہے ،دسمبر آن پہنچا ہے تیرے آنے کی امید بھی...

Read more

<< < 1 2 3 4 5 6 7 8 9 10 > >>